57

اسٹیٹ بینک کا کمرشل بینکوں پرجرمانہ عائد

اسٹیٹ بینک نے چار کمرشل بینکوں پرجرمانہ عائد کردیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق جمعرات کو اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) نے چار کمرشل بینکوں کو اینٹی منی لانڈرنگ (اے ایم ایل) سے متعلق قوانین کی خلاف ورزی کرنے، صارفین کی معلومات اورفارن ایکسچینج کے قانون پر عمل درآمد نہ کرنے پرجرمانہ 80 کروڑ 51 لاکھ روپے کے جرمانےعائد کیا ہے۔

جے ایس بینک لمیٹڈ، بینک آف پنجاب، الحبیب بینک لمیٹڈ اور سونیری بینک پرجرمانے کی رقم جولائی 2019 کے دوران بینکوں کے خلاف عائد کی گئی تھی۔

مزید پڑھیں: عبدالقادر کے انتقال پرآرمی چیف،وزیراعظم سمیت دیگرعہدے داران کااظہارافسوس

اسٹیٹ بینک نے بینک آف پنجاب کے خلاف غیر ملکی زرمبادلہ کےقوانین کی خلاف ورزی کرنے پر 13.072 ملین روپے جرمانہ، حبیب بینک پر 32 کروڑ روپے کا جرمانہ اور جے ایس بینک کو 48.211 ملین روپے جرمانہ کی رقم کے ساتھ جرمانہ عائد کیا۔

جبکہ 8 جولائی 2019 کو بینک آف پنجاب کو ایک بار پھر 16.119 ملین روپے جرمانہ عائد کیا گیا تھا ۔

اسٹیٹ بینک نے تعزیراتی کارروائی کےعلاوہ بینکوں کو AML/ KYC اور کریڈٹ رسک مانیٹرنگ کے شعبوں کو بہتر بنانے کی بھی ہدایت کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں