52

کشمیر کی صورتحال پر برطانوی وزیر خارجہ ،امریکی رکن کانگریس پریشان

مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر برطانوی وزیر خارجہ اور امریکی کانگریس کی رکن کی جانب سے تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر پوری دنیا تشویش میں مبتلا ہے۔

برطانوی وزیرخارجہ ڈومینک راب نےمقبوضہ وادی کے لاک ڈاؤن کو بین الاقوامی مسئلہ قرار دےدیا ۔

اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کی پامالی دو طرفہ معاملہ نہیں بلکہ عالمی مسئلہ ہے۔خلاف ورزیوں پر تشویش ہے، تحقیقات ہونی چاہئیں۔کسی بھی حال میں بنیادی انسانی حقوق کی فراہمی کو یقینی بنانا ہوگا۔

مزید پڑھیں: پلواما حملہ انٹیلی جنس کی ناکامی کی وجہ سے ہوا ،بھارتی سی آر پی ایف کی انکوائری رپورٹ نے مودی سرکار کے جھوٹ کا بھانڈا پھوڑ دیا

اُ دھر امریکی رکن کانگریس شیرس ڈیوڈزنےامریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو کو خط لکھ کرمسئلہ کشمیر کو بھارت کے سامنے اٹھانے کا مطالبہ کردیا۔

انہوں نے کہا کہ امریکا مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا معاملہ بھارت کے سامنے اٹھائے، انہوں نےکشمیر کےمسئلے پر بات کرنےکو اخلاقی ذمہ داری قرار دیا۔

شیرس ڈیوڈز نےمزید کہا کہ وہ کشمیر کی صورتحال کا بغور جائزہ لے رہی ہیں اور بھارت کی جانب سے کشمیر کی حیثیت تبدیل کرنے پرپریشان ہیں۔

انہوں نے حریت رہنماوں کی گرفتاری پربھی تشویش کا اظہار کیا اورکہا کہ وادی میں جمہوریت کی بالادستی کیلئے بھی بات کرناہوگی۔

شیرس ڈیوڈز نے عالمی مبصرین اوراین جی اوز کا کشمیر میں داخلہ بحال کرنے کا مطالبہ بھی کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں