36

پاک امریکا دوطرفہ تعلقات کاآغازہوچکا ہے،وزیرخارجہ

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نےکہاہےکہ پاکستان اورامریکاکےدرمیان دوطرفہ تعلقات کاآغازہوچکاہے۔

واشنگٹن میں وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نےپریس کانفرنس کرتےہوئےکہاہےکہ امریکی صدرڈونلڈٹرمپ کےساتھ ملاقات 3گھنٹےجاری رہی۔ اوول آفس میں40منٹ تک بات چیت ہوئی۔

وزیرخارجہ کاکہناہےکہ امریکی صدرنےپاکستان کےساتھ وسیع بنیادوں پرپارٹنرشپ قائم کرنےکی خواہش کااظہارکیاہے۔امریکی صدرڈونلڈٹرمپ نےکہاکہ پاکستان کےساتھ ماضی سےہٹ کرمضبوط تعلقات چاہتےہیں۔

شاہ محمودقریشی کےمطابق صدرڈونلڈٹرمپ کاکہناتھا کہ وہ پاکستان کےمعروف وزیراعظم سےملاقات کررہےہیں،صدرڈونلڈٹرمپ نےپاکستانیوں کوعظیم قوم اوروزیراعظم کوعظیم لیڈرکہاہے جبکہ نےپاکستان کوعظیم ملک قراردیاہے۔

شاہ محمودقریشی نےبتایاکہ وزیراعظم عمران خان نےصدرڈونلڈٹرمپ کوپاکستان آنےکی دعوت دی جوامریکی صدرنےقبول کرلی ہے۔ وزیراعظم کی امریکی وزیرخارجہ سےملاقات کل ہوگی۔

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نےمزیدکہاکہ وزیراعظم نےاوول آفس میں امریکی صدرکوتنازع کشمیرکےبارےمیں بتایا،صدرڈونلڈٹرمپ نےمسئلہ کشمیرکوپرامن طریقےسےحل کرنےکی خواہش کااظہارکیاہے۔

انہوں نےکہاکہ آج تک کسی امریکی صدرسےمسئلہ کشمیرکےحل کی خواہش کااتنابرملااظہارنہیں سنا۔

وزیرخارجہ نےکہاکہ صدرڈونلڈٹرمپ نےتجارت میں20گناتک اضافےکی خواہش کااظہارکیاہے،امریکی صدرنےکہاکہ دونوں ممالک میں تجارت بڑھانےکےامکانات موجودہیں۔

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کا کہناتھا کہ اس بات پرکہ ہم ایڈنہیں ٹریڈچاہتےہیں،وزیراعظم نےسرمایہ کاروں کےساتھ کئی نشستیں کیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں