26

قبائلی اضلاع میں صوبائی انتخابات، آزاد امیدوار7، تحریک انصاف 5 نشستوں پر آگے،پیپلزپارٹی اور ن لیگ کا صفایا

پشاور(اب نیوز)خیبرپختونخوا میں ضم ہونے والے 7 قبائلی اضلاع کی 16 صوبائی نشستوں پرنتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے۔ غیر سرکاری و غیر حتمی نتائج کے مطابق آزاد امیدواروں کو 7، تحریک انصاف کو 5، جے یوآئی (ف)2 جبکہ اے این پی اور جماعت اسلامی کو ایک ایک نشست پر برتری حاصل ہے۔ تفصیلات کے مطابق کے پی کے میں انضمام کے بعد قبائلی اضلاع میں صوبائی اسمبلی کیلئے پہلی بار الیکشن کا انعقاد ہوا ہے۔صوبائی اسمبلی کے 16 حلقوں میں پولنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوا جو شام 5 بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہا، شام 5 بجے پولنگ کا عمل ختم ہوا جس کے بعد ووٹوں کی گنتی اور ابتدائی نتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے۔

غیر حتمی و غیر سرکاری ابتدائی نتائج کے مطابق پی کے 100 باجوڑ 1کے104 میں سے 103 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے انور زیب خان 13158 ووٹ لے کر پہلے نمبر پرہیں جبکہ جماعت اسلامی کے وحید گل 11972 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 101 باجوڑ 2کے 103 میں سے 90 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے اجمل خان 9009 ووٹ کےساتھ برتری حاصل کئے ہوئے ہیں ان کے مدمقابل جماعت اسلامی کے صاحبزادہ ہارون الرشید 8964 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں

پی کے 102 باجوڑ 3کے 131 پولنگ سٹیشنز میں سے 63 کے نتائج کے مطابق جماعت اسلامی کے سراج الدین 11657 ووٹ کے ساتھ آگے ہیں جبکہ ان کے مدمقابل آزاد امیدوار خالد خان 7141 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 103 مہند 1کے 86 میں سے 82 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق اے این پی کے نثار احمد 10314 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں ان کے مدمقابل پی ٹی آئی کے رحیم شاہ 10092 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 104 مہمند 2کے 108 میں سے 24 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق آزاد امیدوار عباس الرحمان 4958 ووٹ لے کر پہلے نمبر پرہیں جبکہ پی ٹی آئی کے سجاد خان 3432 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 105 خیبر 1 میں آزاد امیدوار شفیق آفریدی کامیاب قرار پائے ۔ 110 میں سے 110 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق آزاد امیدوار شفیق آفریدی 19524 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ آزاد امیدوار شیرمت خان 10744 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔ اس حلقے میں قومی اسمبلی کی نشست پر تحریک انصاف کے امیدوار نورالحق قادری کامیاب ہوئے تھے جو اب وفاقی وزیر مذہبی امور ہیں۔ یوں نورالحق قادری کے اپنے حلقے میں ان کا حریف امیدوار کامیاب ہو گیا ہے۔

پی کے 106 خیبر 2کے 89 پولنگ سٹیشنز میں سے 47 کے نتائج کے مطابق آزاد امیدوار بلاول آفریدی 8745 ووٹ لے کر پہلے نمبر پرہیں ان کے مدمقابل پی ٹی آئی کے عامر محمد خان آفریدی 4514 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پرہیں ۔

پی کے 107 خیبر 3کے 146 پولنگ سٹیشنز میں سے 100 کے نتائج کے مطابق آزاد امیدوار محمد شفیق 10139 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں ان کے مدمقابل آزاد امیدوار حمید اللہ جان آفریدی 8250 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 108 کرم 1کے 135 میں سے 130 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق جے یو آئی ف کے محمد ریاض 12138 ووٹ لے کرپہلے نمبر پرہیں جبکہ ان کے مدمقابل آزاد امیدوار جمیل خان 11431 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 109 کرم 2کے 130 میں سے 100 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے سید اقبال میاں 26707 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں ان کے مدمقابل آزاد امیدوار عنایت حسین 156076 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 110 اورکزئی کے 175 میں سے 103 پولنگ سٹیشن کے نتائج کے مطابق آزاد امیدوار سید غازی غازن 11651 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں ان کے مدمقابل تحریک انصاف کے شعیب حسن 7294 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 111 شمالی وزیرستان 1کے 76 میں سے 14 پولنگ سٹیشن کے نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے محمد اقبال خان 2870 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں جبکہ جے یو آئی ف کے سمیع الدین 1720 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 112 شمالی وزیرستان 2کے 102 میں سے 66 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق آزاد امیدوار میر کلام خان 7660 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں،تحریک انصاف کے اورنگزیب خان 5583 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 113 جنوبی وزیرستان 1کے 139 میں سے 73 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق آزاد امیدوار وحید خان 6611 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں،جے یو آئی (ف) کے حافظ اسلام الدین 5768 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں

پی کے 114 جنوبی وزیرستان 2کے 98 پولنگ سٹیشنز میں سے 73 کے نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے نصیر اللہ خان 6824 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں ،آزاد امیدوار محمد عارف 6395 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں۔

پی کے 115 سابقہ فرنٹیئر ریجنزکے 163 میں سے 38 پولنگ سٹیشنز کے نتائج کے مطابق جے یو آئی (ف) کے محمد شعیب 5408 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پرہیں ،پی ٹی آئی کے عابد الرحمان 4738 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پرہیں

ترجمان الیکشن کمیشن چوہدری ندیم قاسم کا میڈیا سے گفتگو میں کہنا تھا کہ قبائلی اضلاع میں ووٹ ڈالنےکا عمل پرامن انداز میں اختتام پذیر ہوا اور اس دوران الیکشن کمیشن کو 4 شکایات موصول ہوئیں جو معمولی نوعیت کی تھیں۔انہوں نے کہا کہ پریزائیڈنگ افسر واٹس ایپ کے ذریعے نتائج ریٹرننگ افسر کو بھیجے گا، دور دراز علاقوں سے پریزائیڈنگ افسر خود جا کر آر او کو نتائج دے گا۔ان کا کہنا ہے کہ جن علاقوں میں رات کو نقل وحرکت نہیں ہوتی وہاں نتائج صبح موصول ہونا شروع ہوں گے جب کہ دیگر علاقوں سے نتائج آج رات موصول ہونا شروع ہوجائیں گے۔

ضلع باجوڑ میں صوبائی اسمبلی کی تین، ضلع مہمند میں دو، ضلع خیبر میں 3، ضلع کرم میں 2 اور ضلع اورکزئی میں ایک صوبائی نشست کے لیے ووٹ ڈالے گئے۔ضلع شمالی اور جنوبی وزیرستان میں بھی 2،2 نشستوں کیلئے پولنگ ہوئی، اس کے علاوہ ڈسٹرکٹ سابق فرنٹیر ریجن میں ایک صوبائی نشست رکھی گئی ہے۔ پی کے 115 کے علاقوں میں جانی خیل، بٹہ خیل، جنگل خیل، تحصیل لالچی، تحصیل گمبٹ اور تحصیل درہ آدم خیل شامل ہیں۔عام نشستوں پر 282 امیدوار میدان میں ہیں جبکہ خواتین کی 22 اور اقلیتوں کی 6 مخصوص نشستیں ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں