36

ناجائز ذرائع سے حاصل اثاثے، نیب کا شہبازشریف کے خلاف بڑی کارروائی کا فیصلہ

اسلام آباد : نیب نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کے ناجائز ذرائع سے حاصل اثاثوں کو منجمد کرنے کی کارروائی کا فیصلہ کرلیا ہے، اثاثے منجمد کرنے کے بعد قبضے میں لینے کیلئےکارروائی کی جائےگی۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو (نیب) نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کے خلاف بڑی کارروائی کا فیصلہ کرلیا ہے اور ناجائز ذرائع سے حاصل اثاثوں کو منجمد کرنے کی کارروائی کے لیے خط لکھ دیا۔

نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ 96 ماڈل ٹاؤن لاہور، ڈنگہ گلی میں بنگلہ اور کے پی میں رہائشی گھرکیخلاف اور قیمتی گاڑیوں کے خلاف بھی ضابطے کی کارروائی کیلئے خط تحریر کیا۔

ذرائع کے مطابق اثاثے ٹی ٹی آمدنی سےخریدےگئے، نیب لاہورپہلےمرحلےمیں ناجائزاثاثےمنجمدکرےگا اور اثاثےمنجمدکرنےکےبعدقبضےمیں لینے کیلئےکارروائی کی جائےگی۔

یاد رہے گذشتہ روز رطانوی اخبار نے دعویٰ کیا تھا کہ سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے زلزلہ متاثرین کی امداد میں لاکھوں پاؤنڈ کی خورد برد کی، خادم اعلیٰ نے ڈی ایف آئی ڈی فنڈ پروگرام سے بھی چوری کی۔

رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ برطانوی امدادی ادارے نے پنجاب کے لیے لگ بھگ 50 کروڑ پاؤنڈ پنجاب کو دیے، امداد میں سے چوری کیے گئے لاکھوں پاؤنڈز پہلے برمنگھم منتقل کیے گئے، پھرپیسے مبینہ طور پر شہباز شریف کے برطانوی بینک اکاؤنٹس میں منتقل ہوئے۔

2003 میں شریف خاندان کے اثاثے ڈیڑھ لاکھ پاؤنڈ تھے۔

رپورٹ میں بتایا کہ 2003 میں شریف خاندان کے اثاثے ڈیڑھ لاکھ پاؤنڈ تھے ، جو 2018 میں شریف خاندان کے اثاثے 20 کروڑ پاؤنڈ تک پہنچ گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں