40

یونیورسٹی روڈ فائرنگ، زخمی خاتون دوران علاج چل بسی

کراچی کے علاقے مسکن چورنگی پر لوٹ مار کرنے والے ملزمان کی فائرنگ سے زخمی ہونے والی خاتون اسپتال میں دم توڑ گئیں۔ خاتون جامعہ انجینیرنگ این ای ڈی کے پروفیسر علی رضا کی اہلیہ تھیں۔

تفصیلات کے مطابق مسکن چورنگی کے قریب گلشن اقبال تھانے کی حدود میں فائرنگ کا واقعہ پیش آیا جبکہ پولیس کو شبہ ہے کہ گولی گاڑی کے اندر سے ہی چلی ہے۔

ڈی آئی جی ایسٹ عامر فاروقی کی میڈیا سے گفتگو میں بتایا ہے کہ مذکورہ واقعہ ٹارگٹ کلنگ نہیں ہےمقتولہ کا روٹین تھا کہ وہ سودا وغیرہ لینے جاتی تھیں واقعہ ڈکیتی مزحمت کا ہے خاتون نے مسلح ملزم کو روکا ہے۔

ڈی آئی جی ایسٹ کا مزید کہنا تھا کہ اب تک کی ابتدائی تحقیقات کے مطابق گاڑی سے کچھ دستاویزات ملے ہیں جن پر ڈاکٹر رضی کا نا م لکھا ہے، خاتون کے شوہر پروفیسر ہیں، گاڑی پر این ای ڈی یونیورسٹی کے گیٹ پاس اسٹیکرز بھی لگے ہیں جبکہ این ای ڈی یونیورسٹی انتظامیہ کو اس واقع کی اطلاع کر دی گئی ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ بظاہر خاتون این ای ڈی یونیورسٹی کی ملازم لگتی جبکہ گاڑی سے کوئی ٹھوس شواہد نہیں ملے ہیں۔

واضح رہے کہ آج صبح مسکن چورنگی بلاک 7 تھانہ گلشن اقبال کی حدود میں فائرنگ کا ایک واقعہ پیش آیا جس میں گاڑی میں بیٹھی خاتون گولی لگنے سے شدید زخمی ہوگئی تھی جنہیں ابتدائی طور پر نجی ہسپتال اور پھر سرکاری ہسپتال منتقل کردیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں