32

کراچی پولیس اسٹریٹ کرائم پر قابو پانے میں ناکام

کراچی پولیس اسٹریٹ کرائم پر قابو پانے میں مکمل طور پر ناکام ہوگئی ہے۔

سی پی ایل سی کی رپورٹ کےمطابق ابتدائی چھ ماہ میں گاڑی، موٹرسائیکل اورموبائل فون چھیننے اور چوری کی چھتیس ہزار آٹھ سوچھیاسٹھ وارداتیں رپورٹ ہوئی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق جنوری میں صرف اسٹریٹ کرائم کی 178،فروری میں 184 ،مارچ اور اپریل میں 205وارداتیں ریکارڈ کا حصہ بنیں۔

اس کے علاوہ مئی میں اسٹریٹ کرائم عروج پر رہا ،اس دوران اسٹریٹ کرائم کی 230 وارداتیں رپورٹ ہوئیں۔

واضح رہے کہ شہرقائدمیں بڑھتے اسٹریٹ کرائم کی روک تھام کے لیےسیف سٹی پروجیکٹ تاحال التوا کا شکار ہے۔پچھلے کئی برسوں سے سیف سٹی پروجیکٹ جلدشروع کرنے کے دعوے تو بہت کیے گئے مگر عملدرآمد نہیں کیا گیا۔

اگر سیف سٹی پروجیکٹ پر کام شروع ہوجائے تو نہ صرف اسٹریٹ کرائم بلکہ دیگرسنگین جرائم پر قابو پانے میں بھی مدد ملے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں